تحریک لبیک کا سوشل میڈیا پر گستاخی کرنے والوں کو سزائے موت کا خیر مقدم

سوشل میڈیا پر توہین رسالت کیس میں تحریک لبیک پاکستان نے اسلام آباد کی انسداد دہشت گردی عدالت کے فیصلے کو سراہا۔ جسٹس جواد عباس کی جانب سے دیے گئے فیصلے میں تین ملزمان کو سزائے موت سنائی گئی ہے جبکہ ایک کو دس سال قید اور دس لاکھ جرمانے کی سزا سنائی گئی ہے۔ یہ کیس 2015 میں درج کیا گیا تھا اور عدالت نے گذشتہ دسمبر میں اپنا فیصلہ محفوظ کرلیا تھا۔ تمام ملزمان کے خلاف فیڈرل انویسٹی گیشن اتھارٹی (ایف آئی اے) کے ذریعہ سوشل میڈیا اور ویب سائٹوں پر توہین آمیز مواد پھیلانے پر مقدمہ درج کیا گیا تھا۔ اور ایف آئی اے نے ہی اس مقدمہ میں تفتیش کی اور مجرمان گرفتار کیے۔

حافظ سعد حسین رضوی نے اپنے سرکاری ٹویٹر ہینڈلر کی جانب سے ایک ٹویٹ میں فیصلے کو سراہا۔ انہوں نے ہر معیاری فیصلے کی حمایت کرنے کا عزم کیا اور بین الاقوامی ایما پر اس طرح کے فیصلوں کو (توہین رسالت کے مقدمات میں) اعلی عدالتوں کے ذریعہ منسوخ کرنے کی کوششیں ناکام بنانے کا بھی اعادہ کیا۔